88

دا اکنامک ہٹ مین کا سفر آخرکار مکمل ہوا

دا اکنامک ہٹ مین کا سفر آخرکار مکمل ہوا

دا اکنامک ہٹ مین کا سفر آخرکار مکمل ہوا

محترم قارئین کرام اسلام علیکم

تبدیلی کا سفر جب ایاک نعبد و ایاک نستعین کے نعرے کے ساتھ شروع ہوا تو پاکستان کی جی ڈی پی گروتھ 5.8 تھی جو پی ٹی آئی کے پہلے سال 1.91 پرائی اور اب پی ٹی آئی کے حفیظ شیخ صاحب بتا رہے ہیں 68 سال میں پہلی دفعہ منفی 0.38 پر جائے گی جس کا مطلب ملک میں بے روزگاری غربت اور معاشی تباہی واضح ہے

‏پاکستانی اکانومی کا سائز ن لیگ کے دور حکومت میں 315 ارب ڈالر تھا جو اب اس سال 264 ارب ڈالر ہوا پچھلے دور حکومت میں فی کس آمدنی $1516 تھی نیازی حکومت کے پہلے سال یہ کم ہوکر $1363 ہوئی
اور اس سال $1271 پاکستان کا ٹوٹل قرضہ میں 43 فیصد اضافہ ہوا ڈویلپمنٹ کا ایک کام نہیں ہوا اور اس کے ساتھ جو بڑے سکینڈل منظر عام پر آرہے ہیں جن پر کسی قسم کا ایکشن نہیں لیا جا رہا تو کیوں نہ کہا جائے کہ بہت بڑی سازش کے تحت پاکستان کی اکانامی کو برباد کیا گیا

جھوٹے بیانات کابینہ میں روز ردوبدل ایک مشیر یا وزیر کے خلاف سکینڈل آنے کے بعد اس کو ایک عہدے سے ہٹا کر اسے دوسرے عہدے سے نوازنا اور جن باتوں کا کھلے الفاظ سے ذکر نہیں کیا جاتا تھا اسٹبلشمنٹ کا موجودہ حکومت کو لانے میں کردار وہ ہر محکمے پر فوجی افسران کی تعیناتی نے پول کھول دیا کہ یہ کس کی ایما پر ہوا اور کیوں ہوا تاریخ کے اس سب سے بڑے فراڈ میں دکھ کے ساتھ کہنا پڑتا ہے اداروں نے بھرپور حصہ ڈالا چاہے وہ اسٹبلشمنٹ ہو یا عدلیہ

پاکستانی قوم کی اکانومی کی برباد کرنے کے لیے جس ادارے نے ریڈ کی ہڈی کا کام کیا وہ میڈیا ہے اب چاہے میڈیا اسے بلیک میلنگ کے زمرے میں لے آئے لیکن کسی سے بلیک میل ہونا خود بہت بڑا جرم ہے جتنی لمبی کوریج ایک فراڈ دھرنے کو اور گدھے کو گھوڑا ثابت کرنے میں میڈیا نے فراہم کی اس کی نظیر آپ کو تاریخ میں نہیں ملے گی

اس کے بعد کرونا کے معاملے کو جس طرح مس ہینڈل کیا گیا اس پر میں لکھنا نہیں چاہتا بہت زیادہ لکھا جاچکا ہے پاکستان ایک زرعی ملک ہے اللہ تعالی کا بہترین تحفہ لیکن تاریخ میں ہماری نااہلی کی اتنی داستانیں موجود ہیں کہ ہم اس اس تحفے سے فائدہ نہیں اٹھا سکیں گے کرونا نے پوری دنیا کا نقشا بدل کر رکھ دیا معیشت تمام ممالک کی بیٹھ چکی لیکن اس کے باوجود جو ممالک اپنی خوراک خود پیدا کرتے ہیں وہ مینجمنٹ ٹھیک کرکے اپنی معیشت کو سہارا دے سکتے ہیں اور لوگوں کو بھوکوں مرنے سے بچا سکتے ہیں لیکن یہ صرف میری خام خیالی ہے

جس ملک میں کھانے کی بنیادی چیزیں آٹا چینی چور حکومتی ایوانوں میں بیٹھے ہوں اور ان کا حکومت میں بھرپور اثرورسوخ ہو اور ان کے خلاف کسی قسم کی کارروائی کا سوچا بھی نہ جا سکے وہاں میری بات دیوانے کا خواب ہے اور کچھ نہیں اور ساتھ میں بار بار ایسی وجوہات پیدا کی جارہی ہیں جو فرقہ واریت کو ہوا دیں قادیانیوں کے معاملے میں بار بار چھیڑ چھاڑ کی جارہی ہے وہ ایک بہت بڑا اشارہ ہے کسی بھیانک پیش خیمہ کا سازشی عناصر یاد رکھیں پاکستانی قوم ہر چیز برداشت کر گئی یہ ان کی خام خیالی ہے یہ برداشت کرجائیں گے

اس سارے نقصان میں اپوزیشن نے جو کردار ادا کیا وہ انتہائی شرمناک ہے اگر اپوزیشن پارٹیاں عوامی ووٹ کی دعویدار ہیں تو یہ ملک کو برباد ہوتے ہوئے کیوں دیکھتی رہیں ضرورت اس امر کی ہے کہ عوام اب سمجھ جائیں انہیں اپنے اندر بہت بڑی تبدیلی کی ضرورت ہے اب بھی اگر ملک بچانا چاہتے ہیں تو شخصیت پرستی سے باہر نکل کر حقائق کی طرف توجہ دیں میں صرف اتنا کہوں گا آنے والے حالات بہت سنگین ہوں گے یہ میں نہیں کہہ رہا حقائق کہہ رہے ہیں اللہ تعالیٰ پاکستان کا حامی و ناصر ہو

چوہدری نبی احمد

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں