37

کیپسول براۓ کمی دودھ

مدر کیپسول
۔۔۔۔ کیپسول براۓ کمی دودھ ۔۔۔۔۔۔

ھوالشافی۔
اجزاء نسخہ
مولی کے بیج دوتولہ
سونف چارتولہ
زیرہ سفید چار تولہ

ترکیب تیاری
تمام ادویہ کا سفوف بنا کر زیرو سائز کے کیپسول بھرلیں

مقدار خوراک
ایک ایک کیپسول دن میں تین بار ایک گلاس دودھ گرم میں دوچمچ دیسی گھی شامل کرکے پلا دیں اگر ساتھ بادام کا حلوہ بھی کھائیں تو بہت ھی اعلی رزلٹ ملیگا ان شااللہ

فوائد
دودھ کی کمی پوری ھوگی یاد رکھیں ڈبوں کا دودھ پلانے کے بجاۓ ماں کو اپنا دودھ بچے کوپلانا سب سے افضل ھے اس سے بچہ بے شمار امراض سے بھی بچتا ھے اس میں قوت مدافعت بڑھتی ھے جو بچہ ڈبے کے دودھ پہ پلتا ھے وہ عموما مختلف امراض کاشکار رھتاھے باقی بچے کو خاتون کا دودھ پلانا فطری عمل ھوتاھے اس سے خواتین کی اپنی صحت بھی بہت بہتر رھتی ھے اور جو خواتین مختلف عذر سے بچے کو دودھ پلانے سے اجتناب کرتی ھیں اب وہ خواتین جب بڑھاپے کی طرف قدم بڑھاتی ھیں تواکثریت بریسٹ کینسر میں مبتلاھوجاتی ھیں اب مرد حضرات پہ بھی ایک فرض ھے کہ جب خاتون حاملہ ھوجائے اسی وقت سے اسکی خوراک کا خاص خیال رکھنا فرض ھوتا ھے ایسی خاتون کو بہتر ماحول اور بہتر خوراک میسر کریں تاکہ جب بچہ پیدا ھو توایسی ادویات کی ضرورت ھی نہ پڑے بلکہ خود سے وافر دودھ میسر ھوسکے اور دوسال تک دودھ پلانے کا بھی موقعہ میسر ھونا ضروری ھے ورنہ وہ بچہ کل کو جب نوجوان اور نوجوان سے بوڑھابھی ھوگا لیکن کسی نہ کسی شکل میں ماں کے دودھ کی کمی محسوس ھوتی رھتی ھے کیونکہ زندگی بھر وہ طاقت جسم مین نہیں آسکتی جودوسال مسلسل دودھ پینے والے بچے میں ھوسکتی ھے

پوسٹ اگرپسندآئےتو صدقہ جاریہ سمجھ کر شیئر ضرور کریں

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں